Home

صفا بیت المال کی ہندوستان بھر میں قائم 

شاخوں کے ذمہ داروں کا خصوصی مشاورتی اجلاس

صفا بیت المال انڈیا جس کی خدمات ملک بھر کی مختلف ریاستیں تلنگانہ، آندھر اپر دیش ، کرناٹک ، مہارشٹرا، جھارکھنڈ، آسام ، اتر پردیش ، مدھیہ پردیش میں قائم شاخوں کے ذمہ داران کا دفتر صفابیت المال پر خصوصی مشاورتی اجلاس منعقد ہوا جس میں صدر محترم مولانا غیاث احمد رشادی نے تمہیدی خطاب کیا اور تمام ذمہ داران کو خدمات میں شفافیت بالخصوص حسابات کو صاف ستھرا رکھنے کی تلقین کی اور ان سے کہا کہ اسوقت آئے دن حسابات سے متعلق حکومتی سطح پر جن قوانین کا نفاذ ہو رہا ہے ان قونین کا بھر پور لحاظ رکھیں تاکہ آڈٹ رپوٹ پیش کر تے وقت اداروں کو سہولت ہو سکے ۔ اسکے بعد مفتی عبد المہیمن اظہر القاسمی نائب صدر صفا نے ہر شاخ میں مرکز کی طرح حسابات اپ ڈیٹ رکھنے اور گوگل شیٹ پر آن لائن اندراج کر نے کی جانب توجہ دلائی ، اسکے بعد تمام شاخوں کے ذمہ داران سے خدمات اور حسابات سے متعلق تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔مولانا محمد مصدق القاسمی صاحب نے ترغیبی خطاب کیا اور اخلاص کے ساتھ خدمات کو برقرار رکھنے کی تلقین کی۔ مولانا غیاث احمد رشادی صاحب نے تمام شاخوں کے ذمہ داران سے کامیاب افرادکی گیارہ صفات کو واضح انداز میں بیان کیا۔ نمازظہر کے بعد تمام ذمہ داران نے ’نیا پرانا سب ہی سستا ‘یونٹ بنڈلہ گوڑہ ، صفا ڈائیگناسٹک سنٹر و ہیلت کیر بابا نگر کا دورہ کروایا گیا اور اسکا طریقہ کار بھی سمجھایا گیا۔ مشاورتی اجلاس میں مندرجہ ذیل شاقوں کے ذمہ داران نے شرکت کی: کانپور، بنگلور، ہاسن، شیموگہ، رائچور، خانہ پور، ورنگل، ناگرکرنول، ہمناآباد، چیتاپور، کرنول، عادل آباد، گلبرگہ، لاتور، جنتور، اورنگ آباد، جالنہ، پونے، ناگپور، ہنگولی، مانوت، جامتارا اور گریڈیہہ۔

Medical Camp

Through the Safa Mobile Clinic organised by Safa Baitul Maal, free medical camps are conducted in various slum localities of Hyderabad and Secunderabad where free diagnosis along with free medicines is provided to poor deserving patients; this apart, through Safa Diagnostic Centre, as required, ECG, Nebuliser, all blood and urine examinations, x-ray tests etc. are also provided free of cost.

Safa Micro-Finance

Through Safa Baitul Maal, small traders of Kishanbagh area who do business with usurious loans are provided interest-free loans in order to save them from the curse of usury, so that their economic condition is strengthened and they could progress; hence during the current month, interest-free loans of more than Rs.1 lakh have been issued to 20 persons.



Countdown